چین میں مائیکرو بلاگرز کے اکاونٹس بند کرنے کی تنبیہ

چین میں مائیکرو بلاگنگ کی مقبول ترین ویب سائٹ ویبو کے لاکھوں صارفین کو ایسے تنبیہی پیغامات موصول ہوئے ہیں جن یں انہیں افواہیں پھیلانے سے گریز کرنے کو کہا گیا ہے۔

سروس پروائیڈر کمپنی سینا کا کہنا ہے کہ ویبو کے وہ صارفین جو بقول کمپنی ’جھوٹی معلومات‘ پر مبنی پیغامات بھیجیں گے ان کے اکاؤنٹس معطل کر دیے جائیں گے۔

گزشتہ ہفتے چین کی کمیونسٹ جماعت کے سینیئر حکام نے سینا کا دورہ کیا تھا اور کہا تھا کہ نقصان دہ اور جھوٹی معلومات کا پھیلاؤ روکا جانا چاہیے۔

نامہ نگاروں کا کہنا ہے کہ ملک میں مائیکرو بلاگنگ ویب سائٹس کی مقبولیت کی وجہ سے چینی حکومت کو حساس معلومات کو کنٹرول کرنے میں مشکلات کا سامنا ہے۔

حال ہی میں چین میں ایک سرکاری تھنک ٹینک نے کہا تھا گزشتہ برس کے دوران ملک میں دس لاکھ سے زیادہ ویب سائٹس بند ہوئی ہیں۔

چین میں حکام نے حالیہ برسوں میں انٹرنیٹ پر قواعد و ضوابط کو سخت کیا ہے۔

شہری حقوق کے حامی ارکان چین میں ویب سائٹ کے سنسر حکام پر تنقید کرتے ہیں جو انٹرنیٹ پر چین کی گریٹ فائر وال کے نام سے اپنا تسلط برقرار رکھتے ہیں۔

چین میں کئی ویب سائٹس ایسی ہیں جن تک رسائی عام طور ناممکن بنا دی جاتی ہے جن میں چینی زبان میں بی بی سی کی ویب سائٹ کے علاوہ اور فیس بک، یو ٹیوب اور ٹوئٹر جیسی سماجی روابط کی ویب سائٹس شامل ہیں۔

بی بی سی اردو سروس

چین میں مائیکرو بلاگرز کے اکاونٹس بند کرنے کی تنبیہ” ایک تبصرہ

  1. چین میں اظہارِرائے کی اتنی آزادی نہیں ہے جتنی دُنیا کے دیگر ترقیافتہ ممالک میں ہے۔وہاں لوگ سوشل نیٹ ورک استعمال نہیں کر سکتے۔
    اب یہ صحیح ہے یا غلط۔۔۔۔۔چینی ہی جانیں ، پر ہمارے لیے حیرانگی کی بات ضرور ہے ۱

اپنا تبصرہ بھیجیں